گلگت (پ ر)وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید سے چیئرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل اختر نواز ستی نے ملاقات کی۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان میں قدرتی آفات کا ہمیشہ خطرہ رہتا ہے۔ گلوبل وارمنگ کی وجہ سے بھی یہ علاقہ بری طرح متاثر ہورہا ہے۔ برف باری، بارشوں اور گلیشیرز کے پگھلنے کی وجہ سے ہمیشہ خطرات لاحق رہتے ہیں۔ ششپر گلیشیر بھی ایک چیلنج بنا ہوا ہے اس گلیشیر کی وجہ سے آبادی کو خطرہ لاحق ہے۔ گلگت بلتستان کا جغرافیہ دیگر صوبوں سے بالکل مختلف ہے۔ گلگت بلتستان کی آبادی دور دراز علاقوں میں پھیلی ہوئی ہے۔ان مشکل اور دور دراز علاقوں میں قدرتی آفات کی صورت میں بروقت اقدامات کرنا انتہائی دشوار گزار ہوتا ہے۔ مشکل اور دور دراز علاقوں میں آبادی کے ہونے کی وجہ سے ترقیاتی منصوبے اور ان کی مینٹی ننس پر زیادہ وسائل درکار ہوتے ہیں۔ گلگت بلتستان کے مشکل جغرافیے کو مدنظر رکھتے ہوئے کسی بھی قدرتی آفت میں بروقت ریسیکیو اور ریلیف کیلئے ایک کویک رسپانس ٹیم(Quick Response Team) تیار کی جارہی ہے جوشاہراہوں اور ہائی الیٹچوٹ پر بھی کسی بھی ہنگامی صورتحال میں بروقت مدد کیلئے دستیاب ہوگی جس کی تربیت اور وسائل کیلئے این ڈی ایم اے کا خصوصی تعاون درکار ہے۔ ششپر گلیشیر سے محفوظ طریقے سے پانی کے اخراج کیلئے این ڈی ایم اے گلگت بلتستان ڈیزاسٹر مینجمنٹ اور دیگر متعلقہ اداروں کیساتھ مل کر حکمت عملی بنائیں تاکہ آبادی کو خطرہ نہ ہو۔ مستقبل میں بھی ششپر گلیشیر سے محفوظ طریقے سے پانی کے اخراج کیلئے این ڈی ایم اے کے تعاون سے خصوصی اقدامات کئے جائیں۔ چیئرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل اختر نواز ستی نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان قدرتی آفات کے زد میں ہے جس کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ علاقہ خصوصی توجہ کا مستحق ہے۔ بہترین حکمت عملی اور پلاننگ کی وجہ سے قدرتی آفات کی صورت میں بڑی حد تک ان آفات سے نمٹا جاسکتا ہے۔ گلگت بلتستان ڈیزاسٹرمینجمنٹ (GBDMA) کی جانب سے قدرتی آفات سے نمٹنے کیلئے اقدامات اور پالیسی تسلی بخش ہے جس کو مزید بہتر بنانے کیلئے این ڈی ایم اے ہر ممکن تعاون کرے گا۔ ششپر گلیشیر سے آبادی کو نقصان پہنچائے بغیر پانی کے اخراج کیلئے بھی ہر ممکن تعاون کیا جائے گا۔ گلاف کے تحت مستقبل میں اس قسم کے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے خصوصی سٹڈی کرائی جائے گی۔ موسمیاتی تبدیلیوں کے نقصانات سے نمٹنے اور قدرتی آفات کے نقصانات سے بچاؤ کیلئے حکومت گلگت بلتستان اور گلگت بلتستان ڈیزاسٹرمینجمنٹ کیساتھ ہرممکن تعاون کو یقینی بنائیں گے۔ کویک رسپانس ٹیم(Quick Response Team) کی تربیت اور وسائل کے حوالے سے بھی این ڈی ایم اے اپنا کردار ادا کرے گا۔ گلگت بلتستان